Skip to main content

Posts

Showing posts with the label Mohsin Naqvi

Firaq-e-yaar ki barish malaal ka mosam - Barish Poetry

  Firaq-E-yaar ki barish malaal ka mosam hamaray shehar mein Itra kamaal ka mosam woh ik dua jo meri namuraad lout aayi zuba se roth gaya phir sawal ka mosam bohat dinon se mere zehen ke derichoon mein thehr gaya hai tumahray khayaal ka mosam jo be yaqeen hon baharen ujar bhi sakti hain tu aa ke dekh le mere zawaal ka mosam muhabbaten bhi teri dhoop chaon jaisi hain kabhi yeh hijar kabhi yeh visale ka mosam koi mila hi nahi jis ko Sonpte Anjum hum apne khawab ki khushbu, khayaal ka mosam فراق یار کی بارش ملال کا موسم ہمارے شہر میں اترا کمال کا موسم وہ اک دعا جو میری نامراد لوٹ آئی زباں سے روٹھ گیا پھر سوال کا موسم بہت دنوں سے میرے ذہن کے دریچوں میں ٹھہر گیا ہے تمہارے خیال کا موسم جو بے یقیں ہوں بہاریں اجڑ بھی سکتی ہیں تو آ کے دیکھ لے میرے زوال کا موسم محبتیں بھی تیری دھوپ چھاؤں جیسی ہیں کبھی یہ ہجر کبھی یہ وصال کا موسم کوئی ملا ہی نہیں جس کو سونپتے انجم ہم اپنے خواب کی خوشبو، خیال کا موسم

Bas Ek Tu Hi Reh Gaya Hai Jahan Sara Kho Chuka Ho - Mohsin Naqvi

 Bas Ek Tu Hi Reh Gaya Hai Jahan Sara Kho Chuka Ho Tujhe Apni Ana Main a kar Khafa Karo Ga, Toh Kaya Kro Ga باس ایک تو ہی رہ گیا ہے جہاں سارا کھو چکا ہو تجھے اپنی آنا میں ا کر خفا کرو گا, تو کیا کرو گا